پارلیمنٹ کے سامنے 126 دن کا دھرنا دینے والوں سے طلبہ کا جمہوری احتجاج بھی برداشت نہیں ہو رہا۔ مگر خان صاحب خود تو پارلیمنٹ اور پی ٹی وی پر حملوں کو بھی اپنا جمہوری حق قرار دیتے نہیں تھکتے تھے۔زاہد عباس شاہ

پارلیمنٹ کے سامنے 126 دن کا دھرنا دینے والوں سے طلبہ کا جمہوری احتجاج بھی برداشت نہیں ہو رہا۔ مگر خان صاحب خود تو پارلیمنٹ اور پی ٹی وی پر حملوں کو بھی اپنا جمہوری حق قرار دیتے نہیں تھکتے تھے۔زاہد عباس شاہ

برلن( نمائندہ خصوصی) پاکستان پیپلز پارٹی جرمنی کے صدر جناب زاہد عباس شاہ صاحب نے کہا ہے کہ تبدیلی والی حکومت نے ذرا سی بات پر ڈی پی او کی زندگی کو دائو پر لگا دیا اور آج پشاور میں طلبہ پر بہیمانہ تشدد کیا اس سے نام نہاد تبدیلی کے اندھوں کی آنکھیں کھل گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کوئی بھی مہذب حکومت طلبا پر اس طرح تشدد نہیں کرتی جس طرح آج پشاور میں کے پی کے حکومت نے کیا ہے یہ مہذب معاشرے کے منہ پر تمانچہ ہے۔ طلبا کے ساتھ اس طرح کا سلوک کبھی نہیں ہونا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ تبدیلی کے پی کے سے شروع ہوئی اور اب پنجاب میں تبدیلی نے جو ڈی پی او رضوان کیساتھ کیا اور اب پشاور میں اس کے بعد تبدیلی کا واپسی کا سفر بہت تیزی سے شروع ہوگیا ہے۔

ZAHID ABBAS SHAH, PRESIDENT, PPP, GERMANY, PTI, KPK, DID, WORST, BY, LATHI CHARGING, STUDENTS, IN, PESHAWAR,