پاکستان کی تاریخ میں 5 جولائی 1977ء کا منحوس دن‘ اس المیے کا خالق ہے جس کی وحشت سے پاکستان کے عوام سینتیس سال گزرجانے کے بعد بھی نہیں نکل سکے۔خان زاہد اقبال

پاکستان کی تاریخ میں 5 جولائی 1977ء کا منحوس دن‘ اس المیے کا خالق ہے جس کی وحشت سے پاکستان کے عوام سینتیس سال گزرجانے کے بعد بھی نہیں نکل سکے۔خان زاہد اقبال

Khan Zahid Iqbal, Ex President, PPP France

پیرس(یس اردو نیوز) پیپلز پارٹی فرانس کے سابق صدر خان زاہد اقبال نے یوم سیاہ کے حوالے سے سابق آمر اور پاکستان پر مارشل لا مسلط کر کے منتخب وزیر اعظم شہید ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی دینے والے جنرل ضیا الحق کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ   5 جولائی1977ء کو جنرل ضیاالحق نے صرف جمہوریت کا گلا ہی نہیں گھونٹا تھا بلکہ اس نے پاکستان کے زندہ سماج کی رگوں میں وحشت، دیوانگی، بنیاد پرستی، قتل وغارتگری اور دہشت کا اندھیر ا داخل کردیا تھا۔ پاکستان کا حکمران طبقہ پچا س اور ساٹھ کی دھائیوں میں بھی امریکی سامراج کا اطاعت گزار اور کرائے کا غلام رہا تھا، مگر ضیاالحق کی سربراہی میں سامراجی غلامی کے خونی مضمرات اگلی کئی نسلوں کو بھگتنے پڑرہے ہیں۔اور آج اگر غیر جمہوری سوچ کے گلے پر پائوں نہ رکھا گیا ور جمہوری طاقتوں کو زندہ رکھنے کیلئے سنجیدہ کوشش نہ کی گئی تو پھر پاکستان کا مستقبل شہید ذوالفقار علی بھٹو کی طرح سولی چڑھ سکتا ہے،

پاکستان پیپلزپارٹی جنا ب آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو زرداری کی ولولہ انگیز قیادت میں جمہوریت کی بحالی کیلئے صبر آزما جدو جہد کر رہی ہے جس کو صدیوں یاد رکھا جائے گا،